لڑکے کی ایمانداری

ہوسکے تو وہ بھی کھلا دیجئے۔ یہ سن کر زمیندار نے اپنے لڑکے سے کہا کہ تم فلاں زمیندار کے پاس جاؤ اور میرا سلام دے کر کہو کہ ایک دو سیر پختہ انگور ادھار کے طور پر دے دیجئے۔ بادشاہ نے پوچھا کہ آپ اپنے باغ سے انگور کیوں نہیں منگواتے؟ زمیندار نے کہا کہ ابھی سرکاری آدمی انہیں دیکھ کر سرکاری حصہ (مالگزاری) نہیں لے گیا اور جب تک وہ اپنا حق نہ لے لے مجھے ایک دانہ بھی کھانا اور کھلانا حرام ہے۔ بادشاہ تو اس کے برتاؤ ہی سے خوش تھا اب یہ ایمانداری اور دیانت داری جو دیکھی تو اور بھی خوش ہو گیا اور ہمیشہ کے لئے باغ کی مالگزاری بالکل معاف کر دی۔


اپنی قیمتی رائے سے آگاہ کیجیے

Invalid Input
Invalid Input
Invalid Input
Invalid Input