القرآن

القرآن

’’الله ایسا (قادر) ہے کہ اس نے آسمانوں کو بدون ستون کے اونچا کھڑا کر دیا چنانچہ تم ان (آسمانوں) کو (اسی طرح) دیکھ رہے ہو پھر عرش پر قائم ہوا اور آفتاب و ماہتاب کو کام میں لگا دیا ہر ایک ایک وقت معین میں چلتا رہتا ہے وہی (الله) ہر کام کی تدبیر کرتا ہے اور دلائل کو صاف صاف بیان کرتا ہے تاکہ تم اپنے رب کے پاس جانے کایقین کر لو۔‘‘ (سورۃ الرعد ، آیت 2) 


 

الحدیث

القرآن

"حضرت انس بن مالک رضی اللہ تعالی عنہ کہتے ہیں: رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے مجھ سے فرمایا: میرے بچے، اگر تم سے ہو سکے تو صبح و شام اس طرح گزارو کہ تمھارے دل میں کسی کی طرف سے کوئی میل اور کھوٹ نہ ہو، تو یہ ضرور کرو۔ پھر فرمایا: میرے بچے، یہ (دل صاف رکھنا) میری سنت ہے۔ جس نے میری سنت سے محبت رکھی (اور اس پر چلا) وہی میری محبت رکھتا ہے، اور جو مجھ سے محبت رکھتا ہے وہ جنت میں میرے ساتھ ہو گا۔ (ترمذی شریف)


 

حرف ِ اول - گرما گرم رمضان

 حرفِ اول

رمضان پھر آرہا ہے اور بھرپور گرمی کےساتھ ۔ یعنی اس بار بھی رمضان گرما گرم ہے۔ اللہ سب کو ہمت دے کہ وہ گرمی کے روزے پوری ہمت اور جذبے کے ساتھ رکھیں۔ کوئی بھی مشکل کام ہو ، مسئلہ اسے شروع کرنے کا ہوتا ہے۔ جب ہم نیت کرکے، دل مضبوط کر کے کام شروع کر دیتے ہیں تو سمجھیے آدھا کام ہو جاتا ہے۔ بس اب تسلسل باقی رکھنا ہوتا ہے اور وہ الحمد للہ ہو ہی جاتا ہے۔
رمضان میں پہلے بار گرمی نہیں ہو رہی ۔ جب سے روزے فرض ہوئے ہیں تب سے ہر تیس سال کے بعد موسموں کا ایک چکر پورا ہوتا چلا آرہا ہے۔ تیس سال پہلے روزے جون میں آئے تھے اور اب پھر جون میں ہیں۔

اس وقت کے بچے آھ بھرپور جوان ہیں اور جوان آج بوڑھے ہیں مگر روزہ رکھنے والے روزہ رکھتے ہی ہیں۔ انہیں منع بھی کریں تو نہیں رکتے۔

مزید پڑھیے: حرف ِ اول - گرما گرم رمضان

رمضان کیسے گزاریں

رمضان کیسے گزاریں

رمضان مبارک میں اپنا دن ایک خاص سوچ اور جذبہ کے تحت گزارنے کا عہد کرتے ہوئے اس ٹائم ٹیبل پر عمل کریں گے تو وقت کا صحیح استعمال ہو گا اور درجات میں اضافہ ہو گا
ان شاءاللہ 
فجر 
۱۔فجر کی اذان سنیں اور اس کا جواب دیںاور پھر اذان کے بعد کی دعا پڑھیں۔اقامت اور اذان کے درمیان اپنے لیے دعائیں مانگیں وہ قبولیت کا وقت ہے۔
۲۔اور پھر فجر کی دو سنتیں پڑھیں۔پھر فجر کی فرض نماز اپنے گھر والوں کے ساتھ باجماعت پڑھیںایسا کرنے سے پوری رات کے قیام کا ثواب ملتا ہے۔

مزید پڑھیے: رمضان کیسے گزاریں

آپ سے کچھ کہنا ہے

 آپ سے کچھ کہنا ہے

رحمو بے حد پریشان تھا۔ کئی ماہ سے صحرا ء میں بارش نہیں ہوئی تھی۔ کیابچے کیا بڑے سبھی بارش کی دعا مانگ رہے تھے۔ ایک دن جب وہ اپنے جھونپڑے کے ، آسمان کی جانب ٹکٹکی جمائے بیٹھا تھا کہ اچانک مغرب سے کالی گھٹا نمودار ہوئی۔ رحمو اچھل کر کھڑا ہوگیا۔ اس نے مارے خوشی کے چلانا شروع کر دیا۔ بچوں نے صحرائی گیت گانا شروع کر دیے۔ دیکھتے ہی دیکھتے گھٹا سارے آسمان پر چھاگئی اور موسلا دھار بارش شروع ہو گئی۔ ایسی بارش کہ کنویں جل تھل ہو گئے ، جانوروں نے جی بھر کر پانی پیا اور سوکھی جھاڑیاں خوشی سے لہرانے لگیں۔  رحمو نے سب برتن ، گھڑے اور ڈول بھر لیے۔

مزید پڑھیے: آپ سے کچھ کہنا ہے